fbpx
وومنزہ

کھانے کی وہ چیزیں دوبارہ گرم کرنے پر بیماری کا سبب بن سکتی ہیں

کھانا دوبارہ گرم کر کے کھانا مضر صحت بھی ہو سکتا ہے؟

جولائی 15, 2020 | 2:03 صبح

دور جدید میں وقت کی قلت کے سبب کھانا پکانے کے بعد اکثر فریج یا فریزر میں رکھ دیا جاتا ہے۔ بھوک لگنے کی صورت میں وہاں سے نکال کر اسے مائیکرو ویو یا چولہے پر رکھ کر گرم کر کے کھا لیا جاتا ہے۔

لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ کھانے کی کچھ  چیزیں ایسی بھی ہیں جنہیں پکانے اور فریز کرنے کے بعد دوبارہ گرم کر کے کھایا جائے تویہ انتہائی مضر صحت ثابت ہو سکتی ہیں۔  کھانے کی ایسی چیزوں پر ایک نظر، جنہیں دوبارہ گرم کر کے کھانے سے پہلے ایک بار ضرور سوچیں۔ کیونکہ یہ آپ کو ہسپتال پہنچا سکتی ہیں۔

آلو:

زیاددہ تر لوگ آلو شوق سے کھاتے ہیں۔  اس کی بنیادی وجہ یہ تاثر کہ یہ جھٹ پٹ پکائے جا سکتے ہیں اور انہیں دوبارہ گرم کر کے کھایا جا سکتا ہے۔ لیکن درحقیقت میں ایسا نہیں ہے۔

آلو پکانے کےتھوڑی دیر بعد اس میں ایک بیکٹیریا پیدا ہو جاتا ہے۔ جو فریزر میں جمانے سے بھی ختم نہیں ہوتا۔ جو دوبارہ گرم کرنے کی صورت میں  ‘کلوستریڈیم بوٹولیم‘ بیکٹیریا بن سکتا ہے۔ جو آپ کو بیمار کر سکتا ہے۔ لہزا بہتر یہی ہے کہ آلوؤں کو ہمیشہ تازہ پکا کر کھائیں۔

اور اگر آپ انہیں فریز کرنا ہی چاہتے ہیں تو پھر بہتر یہ ہے کہ پکانے کے فوری بعد انہیں فریز کر لیں۔ دوبارہ گرم کرنے کے لیے مائیکرو ویو کے بجائے چولہے پر کئی منٹوں تک گرم کریں۔

چاول

آلوؤں کی طرح چاول میں بھی بیکٹیریا تیزی سے پھیل سکتا ہے اور گرم کرنے پر بھی اسے ختم نہیں ہوتا۔ چاول میں بیکٹیریا کا یہ حصہ فوڈ پوائزنگ کا باعث بن جاتا ہے۔

ان کے بارے میں بھی ماہرین کا یہی مشورہ ہے کہ آلو کی طرح یا تو صرف تازہ پکے ہوئے چاول ہی کھائیں اور اگر ناگزیر ہو تو انہیں پکا کر فوری طور پر ٹھنڈا کر کے محفوظ کر لیں۔

انڈے:

ابلے ہوئے، تلے ہوئے، یا آملیٹ بنائے ہوئے انڈوں کو دوبارہ گرم کرنا انتہائی مضر صحت ثابت ہو سکتا ہے۔ زیادہ پروٹین والی خوراکوں میں نائٹروجن کی بڑی مقدار بھی موجود ہوتی ہے جو گرم ہونے پر زہریلی ہو سکتی ہے اور یہ سرطان کا سبب بھی بن سکتی ہے۔

 

مرغی کا گوشت:

انڈوں کی طرح ان میں بھی پروٹین ہوتی ہے۔ یعنی اسے ٹھنڈا کرنے کے بعد دوبارہ گرم کرنا بھی خطرے سے خالی نہیں۔ مرغی کے گوشت میں موجود پروٹین کے اجزا فریج سے نکالے جانے کے بعد بدل چکے ہوتے ہیں اور گرم کرنے کی صورت میں مسموم بن کر نظام انہضام متاثر ہو سکتا ہے۔

کھانے کا تیل:

سورج مکھی، کنولا آئل اور کھانا پکانے کے لیے استعمال ہونے والے دیگر ایسے آئل جنہیں ٹھنڈا کمپریس کیا گیا ہوتا ہے، انہیں بھی دوبارہ گرم نہیں کیا جانا چاہیے۔ ایسے کوکنگ آئل میں اومیگا 3 ہوتا ہے جو حرارت کے بارے میں بہت حساس ہوتا ہے۔ طبی ماہرین کے مطابق انہیں گرم کر کے کھانے سے گریز کرنا چاہیے۔

 

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button