آج کا ایشواخبار

پولنگ سٹیشن کے باہر فائرنگ کس نے کی ؟؟؟حکومت اور اپوزیشن دونوں نے بتا دیا ۔۔۔

لاہور/ ڈسکہ:سیالکوٹ میں ضمنی الیکشن کے دوران ہوئی ہلاکتوں کو لے کر حکومت اور اپوزیشن ایک دوسرے کو ذمہ دار قرار دے رہی ہیں ۔یہاں تک کہ دونوں کی طرف سے یہ بھی بتایا جا رہا ہے کہ پولنگ سٹیشن کے باہر گولیاں کس نے چلائیں ۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعلیٰ پنجاب کی معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ ڈسکہ میں ضمنی الیکشن کے دوران شہریوں کی ہلاکت مسلم لیگ (ن) کے گارڈز کی فائرنگ سے ہوئی۔ فردوس عاشق اعوان کا پریس کانفرنس سے خطاب میں کہنا تھا کہ ن لیگ کی قیادت کے ہاتھوں الیکشن کے عملے کو سبوتاژ کرنے کی کوشش ہوئی۔ جن لوگوں کو قانون نے طاقت دی تھی، وہ ن لیگ کو فائدہ پہنچانے میں مصروف رہے۔

معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ شاہی خاندان کی فوج نے ڈسکہ میں انتخابی حلقوں کو یرغمال بنائے رکھا۔ پولنگ سٹیشن کے باہر کارکنوں کو ہراساں کیا گیا۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ ن لیگ والوں کی فائرنگ سے 2 افراد جاں بحق ہوئے۔ ن لیگ کے امیدوار کے گارڈ نے فائرنگ کی اور بھاگ گئے۔

ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ لیگی قیادت نے الیکشن کا عمل سبوتاژ کرنے کی کوشش کی۔ خواجہ سعد رفیق کے حلقے سے ڈی ایم او لایا گیا۔ غیر قانونی کام کرنے والے افسران پر ہماری نظر ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ڈسکہ میں پولنگ عملے کو زدوکوب کرنے کی کوشش کی گئی جبکہ پولنگ سٹیشن کے باہر کارکنوں کو ہراساں کیا گیا۔

دوسری طرف مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے دعویٰ کیا ہے کہ حکومتی امیدوار کے سیکیورٹی گارڈز فائرنگ کرکے بھاگے، ہمارے کارکن شہید ہوئے ہیں۔ ڈسکہ میں لڑائی جھگڑے اور فائرنگ کے واقعات پر اپنا ردعمل دیتے ہوئے الزام عائد کیا کہ یہ غنڈے ریاستی وسائل استعمال کر کے دہشت گردی کر رہے ہیں۔ عوام کے آٹے پر ڈاکا ڈالنے والوں کو عوام کی جان لے کر کیا حاصل کیا؟

مریم اورنگزیب نے کہا کہ چیف الیکشن کمشن کو درخواست کی تھی کہ پولنگ کا وقت بڑھایا جائے، انہوں نے کہا ہے کہ جو ووٹر حدود کے اندر ہو یا باہر وہ ووٹ کاسٹ کرکے جائے گا، آخری ووٹر کے ووٹ ڈالنے تک پولنگ ہوگی۔ لیگی رہنما کا کہنا تھا کہ پولیس کی موجودگی میں فائرنگ کی گئی۔ وزیراعلیٰ پنجاب آئی جی پنجاب اور سی سی پی او کیخلاف واقعے کیخلاف مقدمہ درج ہونا چاہیے۔

Tags

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button