fbpx
اخبارسب کے لیے سب کچھ

کورونا کیسز،اموات کمی، پاکستان میں آج سے لاک ڈاؤن ختم

اگست 10, 2020 | 6:10 صبح

 وفاقی حکومت نے آج سے ملک بھر میں کورونا وائرس کے باعث عائد پابندیاں اور اسمارٹ لاک ڈائون ختم کرنے کا اعلان کیا ہے جسکا مقصد عوام کو احتیاطی تدابیرکی پاسداری کے ساتھ معاشی سرگرمیوں کی اجازت دینا ہے۔

آج سے ریسٹورنٹس، ہوٹلز، جمز، تھیٹر، سینما ہالز، شاپنگ مالز، بیوٹی پارلر اور مزارات بھی کھل جائینگے، بین الاالصوبائی ٹرانسپورٹ پر عائد پابندی بھی آج سے ختم ہو جائیگی تاہم اسکول اور تعلیمی ادارے بدستور بند رہیں گے.

15ستمبر سے شادی ہالز کھولے جا سکیں گے جبکہ 8اگست سے سیاحتی مقامات کھول دیئے گئے تھے۔

پاکستان میں کورونا کیسز ، اموات اور تشویشناک مریضوں کی تعداد کم ہونے لگی، مجموعی طور پر 260248؍ مریض صحت یاب ہوچکے ہیں،اس وقت ملک میں ایکٹو کیسز کم ہو کر 17791رہ گئے ہیں ، آج ملک میں کورونا وائرس سے مزید 15؍ اموات ہوئیں جبکہ 571؍ نئے کیسزآئے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت کی جانب سے لاک ڈائون ختم کرنے کے اعلان کے بعد سندھ میں آج سے کاروباری اور تجارتی سرگرمیاں بحال کردی جائیں گی۔

ترجمان وزیر اعلیٰ سندھ کے مطابق محکمہ داخلہ سندھ کے نوٹیفکیشن کے بعد نئے حکم نامے کا اطلاق ہوگا۔ہوٹل اور ریسٹورنٹس رات دس بجے تک کھولے جائینگے ۔ذرائع کے مطابق محکمہ داخلہ سندھ نے تاحال نوٹی فکیشن جاری نہیں کیا ۔

اب تک ایس او پیز سے متعلق بھی کوئی احکامات جاری نہیں کئے گئے۔ جیو نیوز کے نمائندے کامران رضی کے مطابق سندھ حکومت کے محکمہ داخلہ نے ریسٹورنٹس کھولنے ایس او پیز کا نوٹی فکیشن جاری کرنا تھا تاہم یہ نوٹیفکیشن جاری نہ ہوسکا .

وزیر اطلاعات سندھ ناصر شاہ کا کہنا تھا کہ ایس او پیز تیار کرلی گئیں ہیں اور اس کا نوٹیفکیشن بھی جلد جاری ہوجائیگا تاہم آج سے باقاعدہ طورپر ریسٹورنٹس سندھ میں انہیں رات دس بجے تک کھلا جاسکے گا اور باقی جو کاروباری سرگرمیاں ہیں انہیں بھی دس بجے تک کھولا جاسکے گا تاہم اسکولز اور تعلیمی ادار ے اور شادی ہالز کے بارے میں حکومت سندھ نے فیصلہ کیا ہے کہ 15 ستمبر سے انہیں تعلیمی اداروں کو کھولاجائیگا۔

کورونا ٹاسک فو رس جائزہ اجلاس ستمبر کے پہلے ہفتے میں ہوگا جس میں مزید فیصلے اور رعایتیں دینے سے متعلق بھی فیصلہ کیا جائے گا۔

ادھر وفاقی حکومت کے اعلان کے بعد حکومت بلوچستان نے تمام کاروباری مراکز سے لاک ڈاؤن کی پابندیاں اٹھالی ہیں، کورونا وائرس کے کیسز میں کمی پربلوچستان حکومت نے تمام کاروباری مراکز کو لاک ڈاؤن سے مستثنیٰ قرار دے دیا۔

صوبائی محکمہ داخلہ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق صوبے پھر میں دکانیں،شاپنگ مال اور تجارتی مراکز معمول کے مطابق کھلے رہیں گے۔

پاکستان میں کورونا سے مزید 15 ؍افراد جاں بحق ہوگئے جسکے بعد ہلاکتوں کی تعداد 6094 وگئی جبکہ مزید ً571نئے کیسز سامنے آنے کے بعد مریضوں کی تعداد 284503تک جاپہنچی ہے۔ کورونا کیسز میں کمی کے بعد اس وقت ملک میں ایکٹو کیسز کی تعداد 17791؍ رہ گئی ہے جس میں 791؍ مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔

کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر کے مطابق اب تک کُل 2103699؍ افراد کے ٹیسٹ کیے جاچکے ہیں جبکہ مجموعی طور پر 260248 ؍ مریض صحت یاب ہوچکے ہیں۔ اتوار کو ملک بھر سے کورونا کے مزید 571 کیسز اور 15 ہلاکتیں رپورٹ ہو چکی ہیں جن میں سندھ سے 10 ہلاکتیں اور 303 کیسز، پنجاب سے 3 ہلاکتیں اور 137 کیسز اور خیبر پختونخوا سے ایک ہلاکت اور 57 کیسز جبکہ بلوچستان سے ایک ہلاکت اور22 کیسز سامنے آئے۔

اس کے علاوہ اسلام آباد سے 27 کیسز، گلگت بلتستان سے 20 کیسز اور آزاد کشمیر سے 5 کیسز رپورٹ ہوئے۔ سندھ میں اتوار کو کورونا کے باعث مزید 10 افراد انتقال کرگئے جسکے بعد صوبے میں ہلاکتوں کی تعداد 2272 ہوگئی۔

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں میں مزید 303 افراد میں مہلک وائرس کی تشخیص ہوئی ہے جس کے بعد متاثرہ مریضوں کی تعداد ایک لاکھ 23 ہزار 849 تک جاپہنچی ہے۔

صوبے میں اب تک 115741 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں۔خیبر پختونخوا میں کورونا کے باعث مزید ایک شخص جان کی بازی ہار گیا جسکے بعد صوبے میں ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 1231 ہوگئی۔

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 57 افراد میں مہلک وائرس کی تصدیق ہوئی ہے جسکے بعد متاثرہ مریضوں کی تعداد 34692 ہوگئی۔ کے پی میں اب تک 31612 افراد کورونا وائرس سے صحتیاب بھی ہو چکے ہیں۔پنجاب سے اتوار کورونا کے 137 کیسز اور 3 ہلاکتیں رپورٹ ہوئیں۔

جس کے بعد پنجاب میں کورونا کے مریضوں کی تعداد 94360 اور ہلاکتیں 2169 ہو گئی ہیں۔ صوبے میں اب تک کورونا کے 86266 مریض صحت یاب بھی ہوچکے ہیں۔

اسلام آبادسے اتوار کو کورونا کے مزید 27 کیسز سامنے آئی ہے۔جسے بعد وفاقی دارالحکومت میں کیسز کی مجموعی تعداد 15241 ہو گئی ہے جب کہ اب تک کورونا سے 171 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔

وفاقی دارالحکومت میں کورونا سے متاثرہ 12914 افراد صحتیاب بھی ہو چکے ہیں۔ گلگت بلتستان سے اتوار کو کورونا کے مزید 20کیسز سامنے آئے ہیں۔

جسکے بعد گلگت میں کورونا کے مریضوں کی کل تعداد 2321 اور اموات کی تعداد 55 ہو گئی ہے جب کہ 1902 افراد صحتیاب بھی ہو چکے ہیں۔ آزاد کشمیر سے اتوار کو کورونا کے مزید 5 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔

جس کے بعد آزاد کشمیر میں اب تک مجموعی طور پر 2134 افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوچکی ہے جب کہ وہاں اموات کی تعداد 58 ہے۔

آزاد کشمیر میں اب تک 1883مریض کورونا سے صحت یاب ہوچکے ہیں۔ اتوار کو بلوچستان میں کورونا سے مزید ایک اور شخص جان کی بازی ہارگیا جس کے بعد صوبے میں ہلاکتوں کی تعداد 138 ہوگئی۔

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button