fbpx
اخبارگلوبل ویلیج

امریکہ کی بڑی کارروائی، لاکھوں ڈالر مالیت کا ایرانی تیل ’قبضے میں لے لیا

اگست 15, 2020 | 6:52 صبح

امریکہ نے  وینزویلا جانے والے ایرانی تیل سے لدھے چار بحری آئل ٹینکر اپنے قبضے میں لے لیے ہیں۔ یہ اپنی نوعیت کی سب سے بڑی کارروائی ہے۔

اس حوالے سے جاری ایک بیان میں امریکی محکمہِ انصاف نے کہا کہ انھوں نے ’کامیابی کے ساتھ ایرانی پاسدارانِ انقلاب کی لاکھوں ڈالر مالیت کی تقریباً 11 لاکھ بیرل تیل شپمنٹ کو قبضے میں لیا ہے۔

بیان میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ تیل کی ترسیل امریکی پابندیوں کی خلاف ورزی تھی۔ ’قبضے میں لی گئی اشیا اب امریکی ملکیت ہیں۔’ تاہم بیان میں یہ نہیں بتایاگیا کہ یہ آپریشن کب اور کہاں کیا گیا ہے۔

امریکی محکمہِ انصاف کا کہنا ہے کہ اس آپریشن کے بعد ایرانی بحریہ نے ایک غیر متعلقہ بحری جہاز پر قبضہ کرنے کی کوشش کی جو کہ بظاہر پکڑے گیے مال کو چھوڑانے کی کوشش تھی۔

امریکی محکمہِ خارجہ کی ایک ترجمان نے کہا تھا کہ ایرانی تیل کی فروخت سے اب ان امریکی شہریوں کو فائدہ پہنچایا جا سکے گا جو کہ ’ایرانی ریاستی دہشتگردی سے متاثرہ ہیں نہ کہ یہ ان کے پاس جائیں جو دہشتگردی میں ملوث ہیں۔’

ایک سینیئر امریکی اہلکار نے خبر رساں اداررے اے پی کو بتایا کہ اس آپریشن میں کوئی فوجی ملوث نہیں تھے اور بحری جہازوں کو نہیں پکڑا گیا ہے، صرف ان پر لدے مال کو پکڑا گیا ہے۔

اہلکار کا کہنا ہے کہ امریکہ نے بحری جہازوں کے مالکان، انشورنس کرنے والوں اور کپتان کو اس بات پر مجبور کیا کہ بحری جہازوں پر لدے سامان کو امریکہ کے حوالے کر دیں۔

واضح رہے کہ گذشتہ ماہ ایک امریکی عدالت میں درخوست دائر کیے جانے پر عدالت نے آئل ٹینکروں کو قبضے میں لینے کے لیے وارنٹ جاری کر دیے تھے۔

 

ایران میں پاسدارانِ انقلاب ایرانی فوج کا وہ حصہ ہے جسے امریکہ دہشتگرد قرار دیتا ہے۔

وینزویلا میں ایرانی سفیرہوجات سلطانی نے ان اطلاعات کو جھوٹا قرار دیا۔

انھوں نے ٹوئٹر پر لکھا کہ ’یہ ایک اور جھوٹ اور نفسیاتی جنگ کا ایک اور حربہ ہے جسے امریکہ کی پروپیگنڈا مشین پھیلا رہی ہے۔‘

‘وینزویلا میں ایرانی سفیر کا کہنا ہے کہ نہ تو یہ بحری جہاز اور نہ ہی ان کے مالکان ایرانی تھے۔

امریکہ نے دونوں وینزویلا اور ایران پر پابندیاں لگا رکھی ہیں تاکہ تیل کی درآمد کو روکا جا سکے۔ امریکہ کا مقصد ہے کہ وینزویلا کے صدر نکولاس مادورو اقتدار چھوڑ دیں اور ایرانی حکمرانوں کا موقف تبدیل ہو۔

 

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button