Tickerگلوبل ویلیج

’’خاموش رہو، امی سورہی ہیں‘‘، مری ماں کے گرد بیٹھی دو معصوم بچیوں کی پولیس اہلکار کو تنبیہ

دل سوز واقعہ

’’خاموش رہو، امی سورہی ہیں‘‘، مری ماں کے گرد بیٹھی دو معصوم بچیوں کی پولیس اہلکار کو تنبیہ

پیرس (مانیٹرنگ ڈیسک) ’’خاموش رہو، امی سورہی ہیں‘‘، یہ وہ الفاظ تھے جو دو معصوم بچیوں نے اُس پولیس اہلکار کو کہے جو  بچوں  کی سکول سے کئی دن کی غیر حاضری پر گھر  بھیجے گئے۔

دل دہلانے والے یہ الفاظ اُن کم سن اور معصوم بچیوں نے ادا کیے جو ماں کے انتقال سےبےخبر کئی روز گھر میں ماں کیساتھ  یہ

سمجھ کر رہتی رہیں کہ ان کی والدہ سو رہی ہیں۔

دل سوز واقعہ فرانس کے شہر رینس میں پیش آیا جہاں ایک گھر میں خاتون اچانک چل بسیں اور اس  خاتون کی دو معصوم بیٹیاں، جن

کی عمر یں 5 اور 7 سال  بتائی گئی ہیں ، سمجھتی رہیں کہ اُن کی والدہ سورہی ہیں۔

بین الاقوامی رپورٹس کیمطابق بچیوں کی بغیر اطلاع کےطویل غیرحاضری پرسکول نے پولیس کو اطلاع دی اور جب پولیس اہلکار بچیوں کے گھر پہنچے تو بچیوں نےپولیس اہلکاروں سے دروازے خاموش رہنے کا اور شور نہ کرنے کا کہا کیونکہ اُن کی والدہ سورہی ہیں۔

پولیس اہلکار اصرارکرکے گھرکےاندر داخل ہوئے تو انہیں خاتون کی لاش ملی۔ابتدائی پوسٹ مارٹم رپورٹ کیمطابق خاتون کی موت طبعی تھی۔

مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ 31 سالہ خاتون کا آبائی تعلق افریقی ملک آئیوری کوسٹ سے تھا۔

دونوں بچیوں کو ابتدائی طور پر ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں ان کے طبی معائنے کے بعد انہیں بچوں کی دیکھ بھال کے ادارے میں منتقل کردیا گیا۔

فی الحال تحقیقات میں یہ واضح نہیں ہوسکا کہ خاتون کی موت کو کتنا عرصہ گزرا تھا اورواقعے کے مجرمانہ پہلوئوں پر تفتیش نہیں کی جارہی بلکہ مقامی پولیس کا خیال ہے کہ چند دن انتظار کرنے کے بعد بچیوں سےبیان لینے کی کوشش کی جائے گی۔

Tags

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button