Tickerآج کا ایشو

ڈی جی آئی ایس آئی تقرری معاملہ ، حکومتی رہنما آمنے سامنے آگئے وفاقی وزیر فواد چوہدری وزیراعظم کے معاون خصوصی عامر ڈوگر پر برس پڑے

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سیاسی امور عامر ڈوگر کی جانب سے ڈی جی آئی ایس آئی کے معاملے پر بیان دینے پر شدید رد عمل کا اظہار کیا ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ پتہ نہیں عامر ڈوگر نے کہاں سے باتیں بنا لیں ۔ واضح رہے کہ ایک بیان میں عامر ڈوگر نے کہا تھا کہ وزیر اعظم جنرل فیض حمید کو عہدے پر برقرار رکھنا چاہتے تھے،

انہیں یہ شکوہ ہے کہ ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) انٹر سروسز انٹیلی جنس (آئی ایس آئی) کے تقرر کا اعلان وزیر اعظم آفس سے ہونا چاہیے تھا لیکن یہ پنڈی سے کردیا گیا، گزشتہ رات آرمی چیف اور وزیر اعظم کی طویل ملاقات میں معاملات طے پاگئے ہیں، اب وزارتِ دفاع کے ذریعے تین سے پانچ نام آئیں گے جن میں سے ایک کی منظوری وزیر اعظم عمران خان دیں گے۔دوسری جانب نجی نیوز چینل کے پروگرام میں فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ ڈی جی آئی ایس آئی کی تعیناتی کے لیے قانونی طریقہ کار اختیار کیا جائے گا اور ایک دو دن میں معاملہ حل ہو جائے گا ۔ان کا کہنا تھا کہ آئی ایس آئی کا دنیا بھر میں بہترین مقام ہے ،دنیا آئی ایس آئی کی تعریف کرتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ سول ملٹری تعلقات بہترین ہیں ،کسی قسم کا اختلاف نہیں ہے ،وزیراعظم اور آرمی چیف کی تفصیلی ملاقات ہوئی جس میں کئی ایشوز پر بات چیت ہوئی ۔

Tags

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button