fbpx
اخبارگلوبل ویلیج

سونیا گاندھی کا کانگریس پارٹی کی صدارت سے مستعفی ہونے کا اعلان

اگست 24, 2020 | 9:44 صبح

انڈیا کی حزب اختلاف کی سب سے بڑی جماعت کانگریس پارٹی کی سربراہ سونیا گاندھی نے اعلان کیا ہے کہ وہ پارٹی کی صدارت سے مستعفی ہو رہی ہیں اور کہا ہے کہ ان کا جانشین چننے کا عمل شروع کیا جائے۔

اس پیش رفت کے بعد جماعت کے رہنماؤں کی دلی میں ملاقات ہوئی ہے جس میں یہ نکتہ زیر غور ہے کہ آیا سونیا گاندھی پارٹی کی صدر رہیں گی یا نہیں۔

سونیا گاندھی نے یہ اعلان مخالفین کی جانب سے ایک خط سامنے آنے کے بعد کیا جس میں ان کے ناقدین نے جماعت میں بڑے پیمانے پر تبدیلیوں اور اصلاحات کا مطالبہ کیا ہے۔

انڈیا کی آزادی میں سرگرم رہنے والی کانگریس پارٹی نے انڈیا پر کئی دہائیوں تک حکمرانی کی تاہم حالیہ انتخابات میں ان کی مقبولیت گھٹتی نظر آئی۔

اسی وجہ سے پارٹی کی قیادت پر بھی گاندھی خاندان کی حمایت کرنے پر تنقید کی گئی ہے کیونکہ تقسیم ہند کے بعد سے جماعت کا رہنما گاندھی خاندان کا ہی کوئی فرد ہوتا ہے۔

سنہ 2014 کے انتخابات میں کانگریس کو وزیر اعظم نریندر مودی کی بھارتیہ جنتا پارٹی کے ہاتھوں شکست ہوئی اور جماعت 543 اراکین کی پارلیمان میں صرف 44 نشستیں حاصل کرنے میں کامیاب ہوئی۔

اس کے بعد سے کانگریس کی مقبولیت میں بتدریج کمی آئی ہے اور کئی ایسی ریاستوں میں بھی اس کی طاقت کم پڑتی دکھائی دے رہی ہے جہاں وہ روایتی طور پر حکومت میں رہی ہے۔

سنہ 2019 کے انتخابات بھی کانگریس کے لیے زیادہ حوصلہ افزا نہیں تھے اور کئی مبصرین کے مطابق اس سے ثابت ہوتا ہے کہ جماعت انڈیا کے حالیہ وٹرز میں کتنی غیر مقبول ہو گئی ہے۔

اس وقت کانگریس کی صرف چھ ریاستوں میں حکومت ہے جن میں سے چار میں وہ مخلوت حکومت کا حصہ ہے۔

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button