Tickerسائنس و ٹیکنالوجی

دنیا کی پہلی اُڑن طشتری بن گئی۔۔۔ مقصد جان کر آپ حیران رہ جائینگے

اڑن سواری

نومبر 25, 2021 | 2:43 شام

نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی کمپنی زے وا نے ایسا ڈرون تخلیق کیا ہے جو کہ اپنی بناوٹ کے لحاظ سے کارٹونز اور اینیمیشن میں دکھائی جانیوالی اُڑن طشتری کے ہر معیار پر پورا اترتا ہے لیکن اس کا استعمال آج کے جدید تقاضوں کو پورا کرنے کیلئے ہے۔

تفصیلات کیمطابق اِس ڈرون کو ’’کاربن فائبر‘‘سے بنایا گیا ہے جس کے آگے دو پروپیلرز لگے ہیں اوریہ ایک ایسا ڈرون ہے جس میں ایک شخص کھڑا ہو سکتا ہے۔ آگے ایک شیشہ ہے جس سے اُڑنے والا شخص باہر آسانی سے دیکھ سکتا ہے۔  یہ ڈرون بالکل سیدھا اُڑتا ہے اور اپنی دم پر بیٹھتا ہے۔

زمین سے اٹھنے میں اِس ڈرون کو 20 سکینڈز کا وقت درکار ہوتا ہے اور اِس اڑن سواری میں کھڑا ہونیوالا شخص اپنے پیٹ اور سینے کو تھوڑا آگے کی طرف جھکاتا ہے جس سے یہ ڈرون نما ’’اُڑن طشتری ‘‘ جھک جاتی ہے۔ ڈیزائن اور وزن کو دیکھتے ہوئے یہ سواری ایک وقت میں 80 کلو میڑ کا سفر طے کر سکتی ہےاور زیادہ سے زیادہ 257 کلومیٹر کا راستہ طے کر سکتی ہے۔

اس سے قبل دنیا میں ڈرون کی دو اقسام ہی دریافت ہو چکی ہے ایک ڈرون جو کہ سیکیورٹی اور میزائل سسٹم کیلئے استعمال ہوتا ہے اور دوسرا وہ  جو ڈرامیں ، فلمیں ، ڈاکیومینٹریاں اور فوٹیج  لینے کیلئے استعمال کیا جاتا ہے۔

Tags

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button