fbpx
Tickerشہر شہر سے

وزیراعلیٰ پنجاب نے دیگر صوبوں کے وزرائے اعلیٰ کو پیچھے چھوڑ دیا

جنوری 18, 2022 | 12:17 شام

اسلام آباد (نیوزڈیسک)وزیر اعلیٰ عثمان بزدار نے کارکردگی میں دیگر صوبوں کے وزرائے اعلیٰ کو پیچھے چھوڑ دیا۔

 

انسٹیٹیوٹ فار پبلک اوپینین ریسرچ ( آئی پور )نے پاکستانی عوام کی آراء پر مبنی نیا سروے جاری کیا ہے جس کے مطابق پنجاب سے 51فیصد شہریوں نےعثمان بزدار کے صوبے پنجاب میں ترقیاتی کام کروانے کے حوالے سے کارکردگی پر اطمینا ن کا اظہار کیا ہے ۔خیبرپختونخوا میں محمود خان کی کارکردگی سے صوبےکے 48فیصد، جب کہ بلوچستان میں میر

 

عبدالقدوس بزنجو کی ترقیاتی کاموں کے حوالے سے کارکردگی سے 43فیصد افراد مطمئن نظر آئے ۔سندھ کے چیف منسٹر سید مراد علی شاہ صوبے میں ترقیاتی کام کروانے کےحوالے سے اپنی کارکردگی سے38فیصد شہریو ں کو مطمئن کرنے میں کامیاب ہوئے ۔ صوبوں میں حکومتی محکموں کی کارکردگی پر بھی عوام کی رائے سامنے آئی اور

 

صوبائی محکموں کی سب سےزیادہ بہتر کارکردگی ہونے کا خیبرپختونخوا سے 69فیصد افراد نے کہا ۔ صحت عامہ کے شعبے میں پنجاب سے سب سے زیادہ یعنی 72فیصد افراد مطمئن نظرآئے جب کہ تعلیم کے شعبے سے بھی پنجاب سے 86فیصد افراد نے کارکردگی پر اطمینان کا اظہارکیا ۔سروے میں ملک بھر سے 3 ہزار 7 سو سے زائد افراد نے حصہ لیا

 

اور یہ سروے 22 دسمبر 2021سے 9 جنوری 2022 کے درمیان کیاگیا ۔سروے میں ترقیاتی کام کروانے کےحوالے سےسب سے زیادہ یعنی 51فیصد افراد نےصوبہ پنجاب کے وزیر اعلی عثمان بزدار کی کارکردگی سے مطمئن ہونے کا کہاجب کہ 45فیصد نے کارکردگی سے غیر مطمئن ہونے کا بتایا۔خیبر پختونخوا کے وزیر اعلی محمود خان کی کارکردگی سے 48فیصد

 

مطمئن تو 44فیصد غیر مطمئن نظر آئے۔ جبکہ بلوچستان کے چیف منسٹر میر عبدالقدوس بزنجو کی کارکردگی سے 43فیصد افراد مطمئن تو 53فیصد غیر مطمئن نظر آئے۔صوبہ سندھ کے وزیر اعلی مراد علی شاہ کی کارکردگی سے 38فیصد افراد نے مطمئن تو 57فیصد نے غیر مطمئن ہونے کا کہا۔سروے میں صوبوں میں مختلف خدمات کے بہتریا خراب

 

ہونے کا بھی عوام سے سوال کیاگیا ۔ حکومتی محکموں کی کارکردگی سب سے زیادہ بہتر ہونے کا خیبرپختونخوا سے 69فیصد افراد نے کہاجبکہ مزید خراب ہونے کا 29فیصد نے بتایا ۔ جس کےبعد پنجاب سے 61فیصدنے صوبائی محکموں کی کارکردگی پہلے سے بہترتو38فیصد نے مزید خراب ہونے کا کہا ۔ بلوچستان سے 54فیصدنے بہتر تو 42فیصد نے مزید خراب

 

ہونے کا کہا ۔ جبکہ سندھ سے 50فیصد نے صوبے میں حکومتی محکموں کی کارکردگی بہتر تو 48فیصد نے پہلے سے مزید خراب ہونے کاکہا۔صوبوں میں صحت عامہ کے شعبے کی کارکردگی سے سب سے زیادہ مطمئن پنجاب سے 72فیصد افراد نظرآئے ۔ البتہ 26فیصد نےغیر مطمئن ہونے کا کہا ۔ جس کےبعد خیبرپختونخوا سے 67فیصدنے صوبے کے صحت عامہ

 

کے شعبے کی کارکردگی سے مطمئن تو 31فیصد نے غیر مطمئن ہونے کا بتایا۔ بلوچستان سے 56فیصدنے کارکردگی سےمطمئن تو 42فیصد نے غیر مطمئن ہونے کا کہا ۔ جبکہ سندھ سے 53فیصد نے صوبے میں صحت عامہ کے شعبے میں کی کارکردگی سے مطمئن تو 46فیصد نے غیر مطمئن ہونے کاکہا۔تعلیمی سہولیات سے مطمئن افراد کی شرح سب

 

سے زیادہ پنجاب سے 86فیصد نظر آئی ۔ البتہ صوبے سے 12 فیصد نے غیرمطمئن ہونے کا کہا۔ جس کے بعد خیبرپختونخوا میں 80فیصدنے صوبے میں تعلیمی سہولیات سے مطمئن تو 19فیصد نے غیر مطمئن ہونے کا کہا۔ بلوچستان میں 62فیصد تعلیمی سہولیات سے مطمئن تو 35فیصد غیر مطمئن نظر آئے۔ جبکہ سندھ میں تعلیمی سہولیات سے 58فیصد مطمئن

 

تو 40فیصد نے غیر مطمئن ہونے کا کہا۔

Tags

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button