fbpx
Tickerگلوبل ویلیج

وہ نوجوان لڑکی جس نے وراثت میں ملنے والی 7ہزار کروڑ مالیت کی فرم چلانے سے ہی انکار کردیا

نومبر 28, 2022 | 8:06 شام

 

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت کے ارب پتی کاروباری شخص رامیش چوہان کی بیٹی نے وراثت میں ملنے والی 7ہزار کروڑ روپے مالیت کی فرم

چلانے سے انکار کر دیا۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق رامیش چوہان کی بیٹی کا نام جینتی چوہان ہے۔ رامیش نے بھارت میں ’تھمز اپ‘، گولڈ سپاٹ اور لیمکا جیسے برانڈز شروع کیے۔ ان کی منرل واٹر کمپنی بسلیری بھارت کی کامیاب ترین کمپنیوں میں سے ایک ہے، جس کی مارکیٹ ویڈیو 7ہزار کروڑ ہے۔جینتی کی طرف سے بسلیری کو سنبھالنے سے انکار کرنے پر رامیش چوہان متعدد کمپنیوں کے ساتھ رابطے میں ہیں، تاکہ اپنی کمپنی کو فروخت کر

سکیں۔توقع کی جا رہی ہے کہ ٹاٹا کنزیومر پراڈکٹس لمیٹڈ رامیش چوہان کی کمپنی بسلیری کو خرید لے گی، تاہم دونوں کے مابین حتمی طور پر ابھی کچھ طے نہیں ہوا۔ جینتی اس وقت بسلیری انٹرنیشنل کی نائب چیئرپرسن ہے اور رامیش چوہان کی اکلوتی اولاد ہے۔جینتی نے اپنا بچپن دہلی، ممبئی اور نیویارک میں گزارا۔ گریجوایشن کے بعد جینتی نے لاس اینجلس کے فیشن انسٹیٹیوٹ آف ڈیزائن اینڈ مرچنڈائزنگ میں داخلہ لیا اور پراڈکٹ ڈویلپمنٹ کی

تعلیم حاصل کی۔ اس کے بعد وہ فیشن سٹائلنگ پڑھنے کے لیے ’iStituto Marangoni Milano‘ چلی گئیں۔جینتی چوہان نے سب سے پہلے بسلیری انٹرنیشنل کا دہلی آفس جوائن کیا اور پھر 2011ءمیں انہوں نے ممبئی آفس کا چارج سنبھال لیا۔ کمپنی کو 2021ءمیں 95کروڑ اور 2020ءمیں 100کروڑ روپے منافع ہوا تھا۔ 2023ءمیں توقع کی جا رہی ہے کہ کمپنی کو 220کروڑ روپے منافع ہو گا۔ رامیش چوہان اب اکثر بیمار رہتے ہیں اور جینتی چوہان کمپنی سنبھالنے میں کوئی دلچسپی نہیں رکھتیں چنانچہ اب اس کمپنی کو فروخت کیا جا رہا ہے۔

Tags

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button