fbpx
Tickerلائم لائٹ

بیوی سے کہتا ہوں سال بھر حکم چلاؤ لیکن کچھ دن خود کو میرا غلام بھی سمجھو، خلیل الرحمان قمر

دسمبر 1, 2022 | 8:10 شام

 

معروف ڈراما نگار خلیل الرحمان قمر کا کہنا ہے کہ وہ اپنی اہلیہ کو بیوی کو کہتے ہیں کہ سال بھر حکم چلاؤ لیکن کچھ دن خود کو میرا غلام بھی

سمجھوایک ٹاک شو کے دوران خلیل الرحمان قمر نے ہراسانی ، طلاق یافتہ خواتین اور شادی کے بارے میں اپنے خیالات کا اظہار کیا ہے۔خلیل الرحمان قمر نے ہراسانی سے سوال پر کہا کہ اگر ایک لڑکی کسی لڑکے کو پسند کرتی ہے اور وہ اسے گھورتا ہے تو یہ ہراسانی نہیں لیکن اگر ایک لڑکی کو ایسا لڑکا گھورتا ہے جسے وہ پسند نہیں کرتی تو یہ ہراسانی ہے، یہ بالکل فضول بات ہے ۔شادی کے موضوع پر بات کرتے ہوئے خلیل الرحمان قمر

نے کہا کہ ان کے 3 مشورے ہیں اور ان پر وہ خود بھی سختی سے عمل کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ میں ہمیشہ اپنی بیوی سے کہتا ہوں کہ وہ ابھی نادان ہے، اس لیے اسے کسی ایسی عورت سے دوستی نہیں کرنی چاہیے جس کا بریک اپ یا طلاق ہوئی ہو۔ اس کا مطلب یہ نہیں کہ طلاق یافتہ خواتین بُری عورتیں ہوتی ہیں۔ مگر طلاق یافتہ عورتیں آپ کی خوشی میں کبھی خوش ہو ہی نہیں ہوسکتیں، کیونکہ جو آپ کے پاس ہے وہ انہیں کھوچکی ہیں۔

یہ انسانی فطرت ہے۔خلیل الرحمان قمر نے دوسرا مشورہ بتایا کہ وہ اپنی بیوی سے سال میں کم از کم چار سے پانچ دن ”اپنے غلام جیسا برتاؤ“ برداشت کرنے کا مطالبہ کرتے ہیں تاکہ ان کی انا کو بھی سکون ملے۔انہوں نے کہا کہ ”مجھ پر سارا سال حکومت کرو لیکن چار پانچ دن میرے غلام بن جاؤ تاکہ میں بھی اپنی انا کی تسکین کر سکوں اور خود کو غالب آدمی کی طرح محسوس کرسکوں۔“خلیل الرحمان نے کہا کہ شادی کے بعد مرد اپنی دلہن

کو ہمیشہ یہ کہتا ہے کہ میری ماں کی عزت کرنا۔ ایسا کیوں؟ کیا آپ کی والدہ پہلے سے ہی عزت کی مستحق نہیں جو آپ بیوی سے یہ کہہ رہے ہوتے ہیں ؟

Tags

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button